Javed Chaudhry columnsیہ آخر کب تک ہوتا رہے گا

ا
 منگل‬‮ 21 جنوری‬‮ 2020  |

 Javed Chaudhry columnsیہ آخر کب تک ہوتا رہے گا

ظہیر الدین بابر نے کسی سے کہا تھا” میری زندگی بس اڑھائی دن ہے“ پوچھنے والے نے پوچھا ”بادشاہ معظم کیا مطلب“ بابر نے جواب دیا ” میں سمر قند سے افغانستان بھاگ رہا تھا‘ راستے میں تھکاوٹ ہوئی‘ گھوڑا باندھا اور درخت کے نیچے سو گیا‘ مجھے اچانک اپنا جسم کسا ہوا محسوس ہوا‘ آنکھ کھولی تو دیکھا ایک بہت بڑے اژدھے نے مجھے کس لیا ہے اور یہ مجھے منہ کھول کر نگلنے کی تیاری کر رہا ہے‘ میرے پاس دو راستے تھے‘ میں خود کوموت کے حوالے کر دوں یا پھر زندگی کے لیے لڑوں‘ میں نے لڑنا شروع کر دیا۔ موٹیویشنل کتابیں

اژدھا طاقت ور تھا اور میں کم زور‘ میں سارا دن اس کے ساتھ لڑتا رہا یہاں تک کہ میں جیت گیا اورمیں
نے اژدھے کو مار دیا‘ میں اسے زندگی کا ایک دن سمجھتا ہوں‘ دوسرا دن اس سے بھی مشکل تھا‘ میرے جسم پر خارش نکل آئی‘ میں سر سے لے کر پاﺅں تک خارش زدہ تھا‘ میںکپڑوں کو چھو تک نہیں سکتا تھا‘ سارا دن جسم پر مالش کر کے دھوپ میں لیٹا رہتا تھا‘ میرے دشمن شیبانی خان کو میری بیماری کا پتا چلا تو وہ عیادت کے لیے پہنچ گیا‘ میں نہیں چاہتا تھا وہ مجھے بیماری کے عالم میں ننگا دیکھے لہٰذا میں نے طبیبوں کے روکنے کے باوجود شاہی لباس پہنا اور آگے بڑھ کر اس کا استقبال کیا‘ وہ سارا دن میرے پاس رہا‘ میرے پورے جسم پر خارش ہو رہی تھی‘ مجھے لگتا تھا میں نے انگاروں کا لباس پہن رکھا ہے لیکن میں نے اس کے باوجود اپنے جسم کے کسی حصے پر خارش نہیں کی‘ وہ جوں ہی محل سے نکلا‘ میں نے اپنے سارے کپڑے اتار دیے‘ میرا پورا جسم لہو لہان ہو چکا تھا‘ وہ میری زندگی کا دوسرا دن تھا“ وہ رک گیا‘ پوچھنے والے نے پوچھا ”اور آدھا دن“ بابر نے ہنس کرجواب دیا ”میری ساری فتوحات اور بادشاہت صرف آدھے دن کے برابر ہیں“۔ہم اسے اقتدار کا بابری فارمولا کہہ سکتے ہیں اور اس فارمولے کے مطابق اڑھائی دن کی اس زندگی میں اقتدار کی حیثیت آدھے دن سے زیادہ نہیں ہوتی‘ باقی زندگی صرف اور صرف برداشت ہے اور برداشت حکمرانوں کا اثاثہ ہوتی ہے۔ انسائیکلوپیڈیا کتب

آپ اگر برداشت نہیں کر سکتے اور آپ اگر اپنی سوچ‘ اپنے فیصلوں‘ اپنی نفرت‘ اپنی خارش اور اپنی پسند کو دوسروں سے چھپا نہیں سکتے تو پھر آپ حکومت کے قابل نہیں ہوتے‘ آپ پھر عام آدمی سے بھی کم زور ہیں‘ میں اکثر لیڈر شپ کے سیشنز میں امریکی صدر جان ایف کینیڈی کا واقعہ سناتا ہوں‘ کینیڈی کے والد جوزف پیٹرک کینیڈی امریکا کے مشہور بزنس مین اور سفارت کار تھے‘ وہ برطانیہ میں امریکا کے سفیر بھی رہے‘ وہ انتہائی سمجھ دار اور زیرک انسان تھے۔ شاعری کتب

جان ایف کینیڈی صدر بننے کے بعد اپنے والد سے ملنے گیا اور ان سے کہا ”میں ایک مخمصے کا شکار ہوں“ والد کتاب پڑھ رہا تھا‘ اس نے سر اٹھا کر پوچھا ”کیا مطلب“ کینیڈی نے جواب دیا ”میرے بے شمار معاشقے ہیں‘ میں صدر بن چکا ہوں‘ میں اب ہر وقت ایجنسیوں اور میڈیا کی نظروں میں رہوں گا‘ مجھے خطرہ ہے میں اپنے معاشقوں کو زیادہ دیر تک میڈیا‘ ایجنسیوں اور اپنی بیوی سے خفیہ نہیں رکھ سکوں گا“ والد نے قہقہہ لگایا اور کہا ” تمہیں فوراً استعفیٰ دے دینا چاہیے“۔

کینیڈی نے حیران ہو کر پوچھا ”کیوں؟“ والد نے جواب دیا ”جو شخص اپنے معاشقے میڈیا‘ ایجنسیوں اور بیوی سے نہیں چھپا سکتا اسے امریکا جیسی سپر پاور کا صدر نہیں ہونا چاہیے“ یہ ہوتے ہیںسیاست دان‘ یہ ہوتے ہیں حکمران یعنی آپ اپنی بیوی کو بھی اپنی سوچ کی ہوا نہ لگنے دیں جب کہ ہمارے ملک میں کیا ہو رہا ہے؟ ہمارے ملک میں آبی وسائل کے وفاقی وزیر فیصل واوڈا14 جنوری کو کاشف عباسی کے پروگرام میں سیاہ بوٹ لے کر آ گئے‘ وفاقی وزیر نے وہ بوٹ میز پر رکھا اور بوٹ دکھا دکھا کر کہا ”پاکستان مسلم لیگ ن نے لیٹ کر اور اسے چوم کر ووٹ کو عزت دی“۔

ان کا اشارہ آرمی ایکٹ میں ترمیم کی طرف تھا اور ان کے کہنے کا مطلب تھا ”ن لیگ نے بوٹ کی وجہ سے ووٹ دیا“ فیصل واوڈا کی یہ حرکت پورے ملک میں پھیل گئی اور میڈیا‘ حکومت ‘ اداروں اور عوام کی طرف سے رد عمل آنے لگا‘ ملک کے تمام صحافیوں‘ اینکرز اور سیاست دانوں نے کھل کر مذمت کی لیکن وزیراعظم نے 24 گھنٹے بعد واوڈا صاحب کو ہلکا سا ”ڈس پلیر“ شو کیا‘ یہ واقعہ اس قدر قابل افسوس اور ناقابل برداشت تھا کہ حکومت کا کوئی ترجمان اسے ڈیفنڈ کرنے کے لیے تیار نہیں تھا بہرحال دباﺅ آیا اور خوف ناک آیا اور یہاں تک آیا کہ پیمرا نے 15 جنوری کی شب کاشف عباسی اور ان کے پروگرام پر دو ماہ کے لیے پابندی لگا دی۔

یہ پابندی بھی میڈیا میں کنٹرو ورشل ہو گئی‘ میڈیا نے جب بار بار کہنا شروع کر دیا‘ آپ نے مجرم چھوڑ دیا اور جائے واردات کو سزا دے دی تو وزیراعظم نے فیصل واوڈا پر پندرہ دن کے لیے میڈیا میں آنے پر پابندی لگا دی‘ آپ ذرا سزا ملاحظہ کیجیے‘پندرہ دن کی پابندی اور وہ بھی میڈیا میں آنے پر! واہ کیا بات ہے چوپٹ راج کی۔یہ بظاہر چھوٹا سا واقعہ تھا لیکن یہ واقعہ اپنے منہ سے بے شمار حقائق بتا رہا ہے‘ حکومت کو اب یہ ماننا ہوگااس کے وزراءصرف تجربے میں مار نہیں کھا رہے یہ عدم برداشت اور تہذیب کی کمی کے شکار بھی ہیں۔

یہ گفتگو کے دوران بھی عقل کھو بیٹھتے ہیں اور یہ اپنی حرکتوں سے بھی حیران کر دیتے ہیں‘ آپ کسی وزیر کو دیکھ لیں یہ آپ کو دفتروں‘ میٹنگز‘ پریس کانفرنسوں اور لائیو ٹیلی ویژن شوز میں موبائل فون پر مصروف نظر آئے گا‘ یہ لوگ سفیروں اور غیر ملکی وزراءکے ساتھ بھی میز پر آمنے سامنے بیٹھ کر ملاقات کرتے ہیں‘ آج تک کسی نے ان کو یہ نہیں بتایا میز پر آمنے سامنے بیٹھنا سفیر یا مہمان وزیر کی بے عزتی ہوتی ہے‘ وزیراعظم بھی روز یہ غلطی کرتے ہیں‘ یہ مہمان وزراءکو بھی بنی گالہ بلوا لیتے ہیں۔

بنی گالا میں گارڈز پوسٹ کے ساتھ دو نئے کمرے بن گئے ہیں‘ وزیراعظم مہمانوں کو وہاں ملتے ہیں‘ گارڈز نے باہر شلواریں دھو کر لٹکائی ہوتی ہیں‘ اومان کے مذہبی امور کے وزیرشیخ عبداللہ بن محمد7 جنوری کوپاکستان کے دورے پر آئے‘ انہیں بھی بنی گالا بلا لیا گیا‘ وزیراعظم اس وقت لان میں دھوپ سیک رہے تھے‘ انہوں نے کوٹ کے نیچے جیکٹ پہن رکھی تھی اور دائیں بائیں عام سی کرسیاں پڑی تھیں‘ اومانی وزیرکو انہی کرسیوں پر بٹھا دیا گیا اور ہلکی پھلکی بات چیت کر کے روانہ کر دیا گیا۔

میں اس میں وزیراعظم کو ذمہ دار نہیں سمجھتا‘ یہ زندگی میں پہلی بار وزیراعظم بنے ہیں‘ یہ پروٹوکول کو نہیں سمجھتے‘ وزیراعظم کو سمجھانا پروٹوکول ڈیپارٹمنٹ کا کام ہے‘ یہ انہیں بتائیں مہمان کیا ہوتے ہیں اور ہمیں ان کے ساتھ کیا سلوک کرنا چاہیے‘ ہم ایک طرف پوری دنیا سے بھیک مانگ رہے ہیں اور دوسری طرف ہم مہمان وزیروں اور سفیروں کے ساتھ یہ سلوک کرتے ہیں‘ ہمیں عقل سے کام لینا چاہیے‘ دوسرا پروٹوکول ڈیپارٹمنٹ کو کابینہ کو بھی بریف کرنا چاہیے‘ یہ وزراءکو بھی بولنے‘ چلنے‘ اٹھنے بیٹھنے اور میڈیا کے سامنے آنے کا طریقہ بتائیں۔

یہ وزراءجو چاہتے ہیں بول دیتے ہیں اور جو چاہتے ہیں کر گزرتے ہیں اور اس کی قیمت بعد ازاں ملک کو ادا کرنی پڑتی ہے‘ ہم ایک طرف پوری دنیا میں اکیلے ہو چکے ہیں‘ دوسری طرف ہم اندرونی نفاق کا شکار ہیں اور تیسری طرف پورا ملک اس وقت قبض کا شکار ہے‘ بیورو کریسی کام نہیں کر رہی‘ آپ کسی ادارے کے بورڈ کی ایک سال کی کارکردگی دیکھ لیں آپ کو بورڈ کا ہر فرد اختلافی نوٹ لکھتا نظر آئے گا‘ میں دل سے سمجھتا ہوں حکومت نے اس دن بیورو کریسی کے ہاتھ باندھ دیے تھے جس دن فواد حسن فواد اور احد چیمہ گرفتار ہوئے تھے۔

ہم فواد حسن فواد سے لاکھ اختلاف کر سکتے ہیں لیکن ان کی مہارت اور حب الوطنی پر انگلی نہیں اٹھائی جا سکتی‘ سی پیک اور میاں نواز شریف کی اکنامک پالیسی یہ دونوں فواد حسن فواد کا کمال تھا‘ احد چیمہ نے بھی دو دو سال کے منصوبے ایک ایک سال میں مکمل کر کے ریکارڈ قائم کر دیا لیکن آج افسر جب ان کا حشر دیکھتے ہیں تو یہ کام سے توبہ کر لیتے ہیں‘ افسر شاہی کی حالت یہ ہے کوئی بھی اچھا بیورو کریٹ کسی اہم پوزیشن پر تعیناتی کے لیے تیار نہیں ہوتا۔

یہ لوگ کسی بڑے منصوبے کی اجازت تک نہیں دیتے‘ یہ کراکری خریدنے کی فائل بھی وزیراعظم کو بھجوا دیتے ہیں‘ فضول سے فضول ایشو بھی کابینہ میں پہنچ جاتا ہے اور کابینہ سے منظوری کے بعد بھی اس پر عمل نہیں ہوتا‘ یہ صورت حال اس وقت تک قائم رہے گی جب تک احد چیمہ اور فواد حسن فواد باہر نہیں آتے‘ بیورو کریٹس اس سے پہلے کام نہیں کریں گے اور اوپر سے وزیراعظم بھی اناڑی سرجن کی طرح 25 مریضوں کے سینے کھول کر بیٹھ گئے ہیں چناں چہ معیشت سے لے کر ماحولیات تک سارے مریض اس وقت آخری سانسیں لے رہے ہیں اور آپ مزید انتہا دیکھیے فیصل واوڈا بوٹ لے کر لائیو شو میں آ جاتے ہیں۔

حکومت آخر کرنا کیا چاہتی ہے؟ یہ لوگ کہیں اس ملک سے انتقام تو نہیں لے رہے؟یہ سلوک تو کوئی دشمن کے ساتھ بھی نہیں کرتا‘ ہم بھی کیا لوگ ہیں‘ ہم نے پورا ملک اٹھا کر ایسے ناتجربہ کاروں‘ غیر تہذیب یافتہ اور متکبر لوگوں کے حوالے کر دیا جو سٹوڈیو کی میز پر بوٹ رکھ کر کہتے ہیں یہ لوگ اس بوٹ کو چاٹتے رہے‘ چومتے رہے اور پھر جب ردعمل آتا ہے تو یہ کہتے ہیں ”کیا ہم نے غلط کہا“ یہ معذرت تک کرنے کے لیے تیار نہیں ہوتے‘ یہ کیا ہو رہا ہے اور یہ آخر کب تک ہوتا رہے گا؟کیا ملک میں کسی کے پاس اس سوال کا جواب ہے!

The Quran translated into different languagesدنیا کی مختلف زبانوں میں ترجمہ قرآن

different languages

Language(s) available
1 – مصحف الشمرلي الطبعة المصرية للمصحف الشريف
العربية (Arabic)
2 – THE NOBLE QUR’AN Translation of the Meanings and Commentary
English (Eng)
3 – The Qur’an English Meanings Revised and Edited by SAHEEH INTERNATIONAL
English (Eng)
4 – LE NOBLE CORAN et la traduction en langue française de ses sens
Français (French)
5 – Le Qur’ān Traduction du sens de ses Versets
Français (French)
6 – EL MENSAJE DEL QUR’AN
Español (Spanish)
7 – Traducción de los significados de EL SAGRADO CORÁN en idioma Español
Español (Spanish)
8 – Der edle Qur’an und die Übersetzung seiner Bedeutungen in die deutsche Sprache
Deutsch (German)
9 – Überseteung der Bedeutungen Des edlen Qur’ans in die deutsche Sprache
Deutsch (German)
10 – Al-Fâtihah och Djuz ‘Amma tillsammans med översättningen av dess versers betydelser på svenska
Svenska (Swedish)
11 – Koranen på norsk
Norsk (Norwegian)
12 – قرآن كريم وترجمة معاني آن بزبان فارسي
فارسي (Persian)
13 – Święty Quran Noble Kuran Tłumaczenie od ten Treści po polsku
Polski (Polish)
14 – Il Sacro Corano
Italiano (Italian)
15 – Il Nobile Corano E la traduzione dei suoi significati in lingua italiana
Italiano (Italian)
16 – Koranen for begyndere Sûrat al-Fâtiħah (01) og dijuzaam-ma (78-114)
Dansk (Danish)
17 – Aatelinen Quran
Suomi (Finnish)
18 – Свещен Коран
България (Bulgarian)
19 – De vertaling van de betekenis van de Edele Qur’an
Dutch (Nederland)
20 – INTERPRETATIE VAN DE BETEKENIS VAN DE HEILIGE KORAN
Dutch (Nederland)
21 – TO IEPO KOPANIO
Ελληνικά (Greek)
22 – TRADUCEREA SENSURILOR CORANULUI CEL SF?NT ?N LIMBA ROM?N?
Română (Romanian)
23 – 성 꾸란의 한국어 번역 및 해설
한국어 (Korean)
24 – KUR’AN-I KERİM
Türkçe (Turk)
25 – əl-Fatihə surəsi və cüz Əmmənin Azərbaycan dilinə tərcüməsi
Azərbaycan (Azr)
26 – 日本語の翻訳は、クルアーンの崇高な意味を解説
日本語 (Japanese)
27 – AL QUR’AN ALAPONLE
Yorùbá (Yoruba)
28 – د قرآن كريم ترجمه او تفسير په پنبتوژبه كنبى 1 دويم جلد 1-15
پشتو (Pashto)
29 – د قرآن كريم ترجمه او تفسير په پنبتوژبه كنبى 2 دويم جلد 16-30
پشتو (Pashto)
30 – KITAB SUCI AL-QURAN
Melayu (Malay)
31 – KUR’AN S PREVODOM
Bosanski (Bosnian)
32 – Tradução do sentido do NOBRE ALCORÃO
Português (Portuguese)
33 – Os Significados dos Versículos do Alcorão Sagrado
Português (Portuguese)
34 – СМЫСЛОВОЙ ПЕРЕВОД СВЯЩЕННОГО КОРАНА НА РУССКИЙ ЯЗЫК
Русский (Russian)
35 – Перевод смыслов Священного корана на русский язык
Русский (Russian)
36 – 神圣古兰经 (神聖古蘭經)
汉语 (Chinese)
37 – 中文譯解 古蘭經 法赫德國王古蘭經印製廠
汉语 (Chinese)
38 – KUR’AN-i Përkthim me komentim në gjuhën shqipe
Shqip (Albanian)
39 – AL QUR’AN DAN TERJEMAHNYA
Bahasa (Indonesia)
40 – വിശുദ്ധ ഖുര്ആ ന്? സമ്പൂര്ണ്ണ മലയാള പരിഭാഷ
മലയാളം (Malayalam)
41 – Last 3 Chapters of the Noble Qur’an
বাংলা (Bangla)
42 – আল – কুরআনুল করীম’র
বাংলা (Bangla)
43 – Qur’ani Tukufu
Sawahili (Sawa)
44 – AL FATIHAH AT JUZ-U AMMA
Tagalog (Filipino)
45 – यवित्र कुआन
हिन्दी (Hindi)
46 – ALKUR’ANI MAI GIRMA Da Kuma Tarjaman Ma’anõninsa Zuwa Ga Harshen HAUSA
Hausa (Hau)
47 – قرآن كريم مع اردو ترجمة و تفسير
اردو (URDU)
48 – The Noble Qur’an
ภาษาไทย (Thai)
49 – SORTE AL-FAATIHA E FECCERE AMMA
Fulani (Ful)
50 – IKUR’AN EYINGCWELE
isiZulu (Zulu)
51 – фатиха суросунун тафсири
кыргыз тили (Kyrgyz)
52 – NOBLE QURAN
తెలుగు (Telugu)
53 – THE NOBLE QUR’AN
Tigrinna (Tigrinya)
54 – NOBLE QUR’AN
Sinhala (Sinhalese)
55 – FATIHA EM O DŽUZU AMME Em leskoro iraniba ki Romani čhib
čhib (Romani)
56 – NOBLE QURAN
Македонски (Macedon)
57 – NOBLE QURAN
غثمازيغث (Tamazight)
58 – NOBLE QURAN
Khmer (Cambodian)
59 – NOBLE QURAN Tamil
தமிழ் (Tamil)
60 – قرئان كه ريم
ئويغورچە‎ / ئويغور تىلى‎ (Uyghur)
61 – The Transliteration of the Noble Qur’an
Latin (Latin)
62 – QUR’AN YOLEMEKEZEKA yotanthauzidwa m’chichewa
Chicheŵa (Chich)
63 – So Qur’an al Karim ago so Kiya pema ana iron ko basa a iranon sa pilimpinas
Iranon (Ira)
64 – Құран Кәрим
Қазақ тілі (Kazakh)
65 – QURAANIKA KARIIMKA Iyo Tarjamada Macnihiisa Ee Afka Soomaaliga
Soomaaliga (Somalia)
66 – THE NOBLE QURAN in the Bambara Language
N’ko (Bambara)
67 – قرآن كريم
براهوئي (Brahui)
68 – פירושי הקוראן בשפה העברית סורת מַרְיַם
עִבְרִית (Hebrew)
69 – Thiên Kinh Qur’an
Việt (Vietnamese)
70 – قرآن مجيد سنڌي ترجمي سان
سنڌي (Sindhi)
71 – Noble Quran in the Burmese language Vol: 1
Burmese (Myanmar)
72 – Noble Quran in the Burmese language Vol: 2
Burmese (Myanmar)
73 – قرآن مجيد تمي? كاشر تفسير
कॉशुर, كأشُر Koshur (Kashmiri)
74 – Koroang Mala’bi’ anna Battuanna Tama di Basa Indoniesia anna Basa Mandar ( 3 bagian terakhir )
Mandar (Mandriya)
75 – EL NOBLE ALCORÀ
kætəˈlæn (Catalan)
Share this:ضرور شیئر کریں۔

Aap Ka Bacha Kamyab Ho Sakta Hai By Qasim Ali Shah Pdf book

Download Link


:

Book Name: Aap Ka Bacha Kamyab Ho Sakta Hai

Author: Qasim Ali Shah

مصنف: قاسم علی شاہ تفصیل: قاسم علی شاہ کتاب آپ کا بچہ کامیاب ہو سکٹا ہے پی ڈی ایف کے مصنف ہیں۔ یہ پاکستان کے نامور ادیب اور ترغیب یافتہ اسپیکر کا ایک اور بیسٹ سیلر ہے۔ یہ کتاب آپ کے بچوں کی تربیت کے بارے میں ہے تاکہ وہ زندگی میں کامیاب ہوں۔ اس کتاب میں مصنف نے شاندار بچوں کی علامتوں کو تفصیل سے بیان کیا ہے۔ کامیاب بچے کی کچھ اچھی عادات ہوتی ہیں اور یہ عادات اسے مستقبل میں فخر بیٹا / بیٹی بناتی ہیں۔ اس کتاب کو پڑھنے سے ، ہر والدین اپنے پیاروں کی کامیابی کے راز جاننے کے قابل ہوجائیں گے۔

Do Susar Do Damaad By Muhammad Azeem Raiee free

ONLINE READ
DOWNLOAD               (5 MB)
OTHER LINK
DOWNLOAD               (5 MB)

سیرت خلفائے راشدین رضوان اللہ علیھم اجمعین پر پہلی غیر منقوط (اردو معری میں لکھی گئی) کتاب

Sabaq Amoz Waqiat By M Haroon Muavia Pdf book downloud

Download Link

تاریخ اسلام کے سو سے زیادہ واقعات کا ایک مجموعہ ہے جس میں ایک سبق موجود ہے۔ مصنف نے اللہ کے انبیا

Book Name: Sabaq Amoz Waqiat

Writer: Maulana Haroon Muavia

ء کی زندگی کے بارے میں بات کی جنہوں نے حق کو عام کیا اور ثقہ کے بارے میں تعلیم دی۔ انہوں نے کچھ صحاح کرم ، اولیاء اللہ ، مختلف حکمرانوں ، اور علمائے کرام کی زندگی کے واقعات کا تذکرہ کیا۔ انہوں نے اس طرف اشارہ کیا کہ جن لوگوں نے اپنی زندگی اللہ کی مرضی کے مطابق چلائی ، انہیں اللہ کی رضا حاصل ہوئی۔ ہارون معاویہ نے اسلام http://irqam.com/kamyab-nojawan-by-syed-irfan-ahmed-pdf-free-b

Manto Ke 100 Afsanay By Saadat Hasan Manto Pdf book

Read Online
Download Link

Book Name: Manto Ke So Afsanay

Writer: Saadat Hasan Manto

۔ سعادت حسن منٹو اردو مختصر کہانی کے ایک عظیم مصنف تھے۔ اردو زبان میں دوسرا مقابلہ کرنے والا نہیں ہے۔ انہوں نے بہت ساری کتابیں تصنیف کیں ، جن میں زیادہ تر مختصر کہانیاں (افساں) ہیں۔ منٹو نے معاشرے کی اصل تصویر دکھائی ، جو حقیقت کی اساس ہے۔ اس نے معاشرے میں موجود منافقتوں اور منافقوں کی نقاب کشائی کی۔ وہ اپنی کہانیوں میں حقیقی کرداروں اور اصل صورتحال کو سامنے لایا ہے۔ لہذا ، منٹو نے قدامت پسندوں کی مخ

Kamyab Nojawan By Syed Irfan Ahmed Pdf free book downloud

Kamyab Nojawan

Writer: Stephen R Covey

مصنف: اسٹیفن آر کووی مترجم: سید عرفان احمد تفصیل: سید عرفان احمد کتاب کامیب نوجاوان پی ڈی ایف کے مصنف ہیں۔ یہ ایک مشہور انگریزی کتاب The 7 Habits of Highly مؤثر لوگوں کا ایک اردو ورژن ہے جو اسٹیفن رچرڈز کووی نے لکھا ہے۔ اس کتاب نے مصنف کو بہت شہرت حاصل کی اور دنیا کی بہت سی دوسری زبانوں میں ترجمہ کیا۔ اس کتاب میں ، مصنف نے نوجوانوں کی ان سات عادات کو بیان کیا ہے جو زندگی میں کامیابی حاصل کرنے میں ناکام رہے ہیں۔ بعد میں ، اس نے ایک کاروباری شخصیت بننے اور ان کی صلاحیتوں کو ثابت کرنے کے لئے کچھ مفید نکات دیں۔ مصنف نے اس کتاب کو نوجوانوں کے لئے محرک مواد کے طور پر استعمال کیا اور انہیں زندگی کے تمام معاملات میں کامیاب ہوتے دیکھنا چاہتا تھا۔

Translator Syed Irfan Ahmed 

Hairat Angaiz Waqiat Urdu By M. Ibrahim Khan Pdf book

Download Link

یہ پوری دنیا میں کچھ عجیب و غریب واقعات کا مجموعہ ہے۔ ان واقعات کا کوئی منطقی یا سائنسی پہلو نہیں ہے۔ گHairat Angaiz Waqiat Urdu By M. Ibrahim Khan Pdf book محققین ان واقعات کی وجوہات تلاش کرنے میں ناکام رہے۔ مصنف نے برمودا مثلث ، آئس مین اور بہت سی دوسری چیزوں پر تبادلہ خیال کیا۔ ایم ابراہیم خان ایک مصنف اور مترجم ہیں۔ انہوں نے کچھ عمدہ کتابیں تصنیف کیں اور ترجمہ بھی کیا۔ ان کے پاس انگریزی اور اردو زبانوں کی عمدہ کمانڈ ہے۔ ابراہیم خان کے متن میں کچھ انوکھی معلومات موجود ہیں۔ مجھے امید ہے کہ آپ کو کتاب حیرت انگاز واقیعت پی ڈی ایف اچھی لگےی۔

Aik Lafz Kiyon By Muzammil Hussain Korai Pdf book downloud

Download Link

Aik Lafz Kiyon By Muzammil Hussain Korai Pdf book downloudہ ایک عمدہ ٹکنالوجی اور معروف علم ای بک ہے جس نے استفسار حل کے نمونوں پر مرتب کیا۔ مصنف نے ای بک میں وضاحت کے ل mind کچھ ذہن اڑانے والے سوالات اور عام اعدادوشمار کا انتخاب کیا۔ مزمل حسین کورائی سائنس محقق اور مصنف ہیں۔ انہوں نے باقاعدہ سائنس اور وسیع پیمانے پر مہارت سے متعلق کچھ قابل ذکر کتابیں تصنیف کیں جو طالب علموں اور عام قارئین کے لئے اسی طرح کارآمد ہیں۔ میری خواہش ہے کہ آپ ای بک آک لافز کیون پی ڈی ایف چاہتے ہو اور دوسروں کو بھی شئیر کریں